Day: October 25, 2020

Health

خراب مسوڑھوں اور امراضِ قلب کی وجہ کیا؟ اہم تحقیق سامنے آ گئی

خراب مسوڑھے کئی طرح کی بیماریوں کو جنم دیتے ہیں۔ اب ایک مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ انتہائی خراب مسوڑھے ذیابیطس، امراضِ قلب، حتیٰ کہ الزائیمر کی وجہ بھی بن سکتے ہیں۔ مسوڑھوں کی خرابی امنیاتی نظام کو متاثر کرتی ہے اور پورے جسم کے خلیات میں سوزش کی وجہ بنتی ہے۔ پیریوڈونٹائٹس یا مسوڑھوں کا مرض منہ کی خراب صحت کو ظاہر کرتا ہے۔ اس سے بلڈ پریشرمیں اضافہ بھی دیکھا گیا ہے الزائیمر کے مریضوں میں بھی یہ کیفیت دیکھی گئی ہے۔ اب یونیورسٹی آف ٹورنٹو کے سائنسدانوں نے اس کی ایک ممکنہ وجہ ڈھونڈی ہے۔ اس کے لیے امنیاتی خلیات کی پہلی صف کے انتہائی اہم خلیات نیوٹروفلس کو دیکھا گیا جو کسی چوٹ، تکلیف یا انفیکشن کی صورت میں ظاہر ہوتے ہیں۔ چوہوں کے مسوڑھے متاثر کرنے کے بعد ان میں نیوٹروفلس کی تعداد بڑھ گئی۔ معدے، آنتوں اور خون میں بھی انہیں دیکھا گیا۔ یعنی مسوڑھوں کی وجہ سے یہ خلیات پورے جسم...
Science

سعودی عرب کا مصنوعی ذہانت کی حکمت عملی اور ٹیکنالوجی کے اہم معاہدوں پر دستخط

سعودی عرب نے مصنوعی ذہانت کی حکمت عملی اور ٹیکنالوجی کے اہم معاہدوں پر دستخط کر دیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق سعودی عرب نے ریاض میں 21 اور 22 اکتوبر کو ہونے والی بین الاقوامی مصنوعی ذہانت سمٹ میں نئی پالیسی کا آغاز کر دیا ہے، اس سلسلے میں اہم ٹیک معاہدوں پر دستخط کیے گئے ہیں۔ ڈیٹا اور مصنوعی ذہانت (اے آئی) سے متعلق سعودی قومی حکمت عملی کے تحت سعودی عرب کو 2030 تک مصنوعی ذہانت کے میدان میں دنیا کے 15 سرفہرست ممالک میں شامل کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے۔ سعودی عرب کی جانب سے انفرا اسٹرکچر، تعلیم اور فائیوجی ٹیکنالوجی میں بھاری سرمایہ کاری، جب کہ مصنوعی ذہانت اور کلاؤڈ اسٹوریج میں ورلڈ لیڈروں کے ساتھ سمجھوتوں کے ذریعے سعودی عرب اس صف میں شامل ہونے جا رہا ہے جسے ورلڈ اکنامک فورم نے چوتھے صنعتی انقلاب کا نام دیا ہے۔ ریاض ورچوئل سمٹ کے دوسرے دن 2 معاہدوں پر دستخط کیے گئے، ...
Health

وزیراعظم پروگرام برائے تدارک ہیپاٹائٹس سی حتمی تیاری کی جانب گامزن

ملک میں ہیپاٹائٹس سی کی روک تھام کا بڑا منصوبہ’ وزیراعظم پروگرام برائے تدارک ہیپاٹائٹس سی’ اپنی تیاری کے آخری مراحل میں داخل ہوگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم پروگرام برائے تدارک ہیپاٹائٹس سی حتمی تیاری کی جانب گامزن ہے۔ 70 ارب روپے کا پی سی ون آخری مراحل میں داخل ہوگیا، پی سی ون منظوری کے لیے پلاننگ کمیشن آف پاکستان بھیج دیا گیا۔ منصوبہ کا 51 فیصد حصہ صوبہ پنجاب کو دیا جائے گا۔ پی سی ون میں پنجاب کے لیے37 ارب مختص کیے گئے ہیں۔ منصوبہ کے تحت پاکستان کی 14 کروڑ آبادی کو اسکرین کیا جائے گا۔ اسکریننگ 12 سال سے 80 سال تک کی عمر کے ہر فرد کی جائے گی۔ پنجاب میں 8 کروڑ آبادی کی اسکریننگ کی جائے گی۔ ہیپاٹائٹس سی کی اسکریننگ پولیو طرز پر گھرگھر جاکر کی جائے گی۔ ہیپاٹائٹس سی مثبت آنے پر پی سی آر ٹیسٹ اور مفت دوائیں دی جائیں گی۔ سروے رپورٹ کے مطابق پنجاب میں ہیپاٹائٹس سی کی ...