Day: October 21, 2020

Health

کیا آپ کو چائے پینے کا یہ فائدہ پسند آئے گا؟

سیب، بیریز اور چائے جیسی غذائیں بلڈ پریشر کو کم کرنے میں اتنی موثر ہیں جتنی دنیا کی سب سے صحت بخش غذائیں۔ یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی۔ طبی جریدے سائنٹیفک رپورٹس میں شائع تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ ایک مخصوص نباتاتی جز فلیونول سے بھرپور غذائیں بلڈ پریشر کو کم رکھنے میں انتہائی مددگار ثابت ہوتی ہیں۔ برطانیہ کی ریڈنگ یونیورسٹی کی اس تحقیق میں 25 ہزار سے زائد افراد کی غذائی عادات کا جائزہ لیا گیا جبکہ یہ بھی جانچا گیا کہ ان کی خوراک میں فلیونولز کی مقدار کتنی ہوتی ہے اور پھر اس کا موازنہ بلڈ پریشر کے نمبروں سے کیا گیا۔ نتائج سے معلوم ہوا کہ فلیونولز کی زیادہ مقدار کا استعمال کرنے والوں کے بلڈ پریشر میں نمایاں کمی (2 سے 4 ایم ایم ایچ جی) آگئی۔ تحقیق میں بتایا گیا کہ یہ خاص طور پر ان افراد کے لیے زیادہ فائدہ مند ہے جو تحقیق کے آغاز پر ہائی بلڈ پریشر کے شکار ہیں...
Health

دل کے امراض میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں اضافہ

دل کے امراض میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں اضافہ،پمز اسپتال میں بائی پاس کے ایک لاکھ پچیس ہزار لیے جانے لگے۔ اسٹنٹ کے لیے بھی ایک لاکھ تیس ہزار ہونا ضروری ہوگیا،مہنگائی کی ستائی عوام کی مشکلات میں اضافہ جاری۔ کورونا کی وبا میں پاکستان میں انٹری کے ساتھ ہی دل کے امراض میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہونے لگا۔دل کی شکایت لے کر آنے والوں کی بیشتر مریضوں کو اینجوگرافی کے بعد بائی پاس یا اسٹنٹ تجویز کیا جانے لگا ہے۔ پاکستان کے دوسرے بڑے اسپتال پمز میں بائی پاس کے ایک لاکھ پچیس ہزارروپے جبکہ کوٹڈ سٹنٹ کے ایک لاکھ تیس ہزار سے ایک لاکھ ساٹھ ہزار تک وصول کیے جارہے ہیں۔ دور دراز سے آنے والے مریض کہتے ہیں دو لاکھ تک ایڈوانس ڈی پوزیٹ کروانے کا کہا جارہا ہے ادویات بھی باہر سے لانے کا کہتے ہیں جائیں تو جائیں کہاں؟ غریب مریضوں کی امیدوں کے مرکز سرکاری اسپتال میں چیک اپ سے قبل کو...
Entertainment

مستقبل کے حوالے سے سوچ سمجھ کر اور مشاورت سے فیصلہ کرتا ہوں‘ احسن خان صرف پراجیکٹ سائن کرنے کاقائل نہیں ،ہمیشہ اپنے کردار کا باریک بینی سے جائزہ لیکر فیصلہ کیا

مستقبل کے حوالے سے سوچ سمجھ کر اور مشاورت سے فیصلہ کرتا ہوں‘ احسن خان صرف پراجیکٹ سائن کرنے کاقائل نہیں ،ہمیشہ اپنے کردار کا باریک بینی سے جائزہ لیکر فیصلہ کیا Source link
Science

جرمن ماہرین نے وقت کے مختصر ترین دورانیے کی پیمائش کرلی

جرمن ماہرین نے وقت کے مختصر ترین دورانیے کی پیمائش کرلی ہے جو صرف 247 زیپٹو سیکنڈ ہے۔ وقت کی یہ پیمائش ایک فوٹون کو ہائیڈروجن ایٹم کے ایک سرے سے دوسرے کونے تک کا فاصلہ (53 پیکومیٹر) طے کرنے کے مشاہدے میں کی گئی ہے، جو آج تک کی انسانی تاریخ میں وقت کی مختصر ترین پیمائش ہے۔ اس سے پہلے وقت کی مختصر ترین پیمائش کا ریکارڈ بھی جرمن سائنسدانوں ہی نے قائم کیا تھا، جو 850 زیپٹو سیکنڈ تھا۔ نیا ریکارڈ اس سے بھی 3.4 گنا مختصر ہے۔ بتاتے چلیں کہ ایک زیپٹو سیکنڈ (zeptosecond) سے مراد ’’ایک سیکنڈ کے ایک ارب ویں حصے کے بھی ایک ارب ویں حصے کا ایک ہزارواں حصہ‘‘ ہوتا ہے۔ وقت کا یہ دورانیہ اتنا مختصر ہے کہ اگر ہم ایک زیپٹو سیکنڈ کو ایک سیکنڈ تصور کریں تو ہمارے مروجہ ’’ایک سیکنڈ‘‘ کا دورانیہ 31,700 ارب سال (اکتیس ہزار سات سو ارب سال) جتنا ہوجائے گا… یعنی ہماری کائنات کی موجودہ عمر (13 ا...