دنیا کی پہلی کورونا ویکسین کی آزمائش، روس کے رکن پارلیمنٹ نے بھی رضاکارانہ طور پر لگوائی


روس میں تیار ہونے والی دنیا کی پہلی کورونا ویکسین رکن پارلیمنٹ نے بھی رضاکارانہ طور پر لگوالی۔

روسی رکن پارلیمنٹ اور لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ ولادیمر زرینووسکی نے رضاکارنہ طور پر کروناویکسین لگوائی، مذکورہ ویکسین کے ٹرائل کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔

رپورٹ کے مطابق ولادیمر نے وہ کرونا ویکسین خود پر آزمائش کے لیے لگوائی ہے جس سے متعلق روسی صدر نے دعویٰ کیا کہ یہ دنیا کی پہلی وبا کے خلاف مؤثر ویکسین ہے، البتہ ویکسین کے مزید تجربات ابھی ہورہے ہیں۔

روس میں لبرل ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ اور 74 سالہ رکن پارلیمنٹ ولادیمر زرینووسکی کو ویکسین لگائی جاچکی ہے جبکہ اس کے اثرات اور نتائج کا اعلان جلد کیا جائے گا۔

روسی وزارت صحت کا کہنا تھا کہ ہائی رسک گروپ پر ویکسین کی آزمائش نومبر یا دسمبر میں شروع کردی جائے گی۔ دوسری جانب روس ستمبر یا اکتوبر میں ایک اور ویکسین کی منظوری کی تیاری کر رہا ہے۔

خیال رہے کہ دنیا کے دیگر ممالک کی طرح روس بھی کرونا کی شدید لپیٹ میں ہے۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *